سعید انور کی بھارت کے خلاف 194 رنز کی اننگز کو 20 سال مکمل

سابق ٹیسٹ کرکٹر سعید انور کی بھارت کے خلاف 194 رنز کی یادگار اننگز کو 20 سال مکمل ہو گئے۔ 21 مئی1997ء کو ایڈیپنڈنس کپ کے چدم برم سٹیڈیم چینئی میں کھیلے گئے میچ میں سعید انور اور شاہد آفریدی نے اننگز کا آغاز کیا مگر شاہد آفریدی صرف 5 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے لیکن وکٹ کی دوسری جانب کھڑے سعید انور کے عزائم کچھ اور ہی تھے جنھوں نے بھارتی بولرز کو پوری دنیا کے سامنے بے نقاب کرتے ہوئے اکیلے ہی 194 رنز بنا ڈالے اور یوں ون ڈے کرکٹ کی تاریخ میں سب سے زیادہ انفرادی سکور بنانے والے پہلے کرکٹر بن گئے۔

انھوں نے اپنی اننگز کے دوران 146 گیندیں کھیل کر 5 چھکوں اور 22 چوکوں کی مدد سے 194 رنز بنائے تاہم صرف 6 رنز کے فرق سے ون ڈے کرکٹ کی پہلی ڈبل سنچری بنانے میں کامیاب نہ ہو سکے۔ یاد رہے کہ پرساد، کمبلے، جوشی، سنگھ، حتیٰ کہ ٹنڈولکر نے بھی بولنگ کے جوہر دکھانے کی کوشش کی مگر سعید انور کسی کو خاطر میں نہ لائے اور ایسی دھلائی کہ یہ میچ پاکستان کی تاریخ کے یادگار ترین میچوں میں سے ایک بن گیا جس میں پاکستان نے 35 رنز سے فتح حاصل کی۔

شین وارن نے سعید انور کو بہترین پاکستانی بلے با زقرار دیدیا

1999 Cricket World Cup. Headingley. 23rd May, 1999. Pakistan beat Australia by 10 runs. Pakistan's Saeed Anwar batting.آسٹریلیا کے سابق مایہ ناز لیگ اسپنر شین وارن نے اپنے دور کا بہترین پاکستانی بلے باز سعید انور کو قرار دیا ہے۔ پاکستان اورانگلینڈ کے درمیان ہونے والے دوسرے ٹیسٹ کے چوتھے اورآخری روزکمنٹری بکس میں تبصرہ کرتے ہوئے سابق لیجنڈ لیگ اسپنر سے جب ان کے دور کے تمام ٹیسٹ کھیلنے والی 9 ٹیموں کے سب سے بہترین بلے بازوں کے بارے میں پوچھا گیا جن کا سامنا ٹیسٹ میچ میں شین وارن سے ہوا تھا تو جواب میں شین وارن نے پاکستانی بلے بازوں میں سابق اوپننگ بیٹسمین سعید انورکا انتخاب کیا۔ شین وارن اور سعید انور 6 ٹیسٹ میچوں میں آمنے سامنے آئے جس میں سعید انور نے 56 اعشاریہ 33 کی اوسط سے رنز بنائے جب کہ ان میں 5 نصف سینچریاں اورایک شاندار سینچری بھی شامل ہے۔

سعید انور کا شمار پاکستان ہی نہیں بلکہ دنیائے کرکٹ کے بہترین اوپننگ بلے بازوں میں ہوتا ہے اورانہوں نے اپنے کیریئر میں بے شمارریکارڈز بنائے اور متعدد یادگاراننگز کھیلیں جس میں بھارت کے خلاف ون ڈے میں ان کی 194 رنز کی اننگز خاص طور پر قابل ذکر ہے جسے 13 سال تک سب س بڑی انفرادی اننگز کا اعزاز حاصل رہا۔ اس کے علاوہ انہیں پاکستان کی جانب سے سب سے زیادہ 20 ون ڈے سینچریاں بنانے کا بھی اعزاز حاصل ہے۔ دوسری جانب شین وارن نے اپنے 15 سالہ ٹیسٹ کیریئرمیں جن بلے بازوں کو گیند کرائی ان میں انہوں نےبھارتی بیٹسمین سچن ٹندولکراورویسٹ انڈیز سے برائن لارا کو سب سے بہترین بلے باز قراردیا.

جب کہ انگلینڈ سے انہوں نے گراہم گوچ، نیوزی لینڈ سے مارٹن کرو، ساؤتھ افریقا سے ہنسی کرونئے اور جیک کیلس، سری لنکا سے اروندا ڈی سلوا، بنگلا دیش سے اشرفل اور زمبابوے کے سابق کپتان ڈیوڈ ہاؤٹن کے نام کا انتخاب کیا۔ واضح رہے کہ آسٹریلیا کے سابق لیگ اسپنر شین وارن ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے بالرز کی فہرست میں دوسرے نمبر پر موجود ہیں۔ انہوں نے اپنے 15 سالہ کیریئر میں 145 ٹیسٹ مچوں میں 708 وکٹیں حاصل کیں جب کہ ون ڈے میں ان کی وکٹوں کی تعداد 293 ہے جو کہ انہوں نے 194 میچوں میں حاصل کیں ۔

Mohsin Hasan Khan

Mohsin Hasan Khan   born 15 March 1955, Karachi, Sindh) is a former Pakistani cricketer who played in 48 Tests and 75 ODIs from 1977 to 1986 mainly as an opening batsman.

Life and career

Playing in this role for Pakistan against India at Lahore in 1982–83, he scored 101 not out of Pakistan’s second-innings total of 135/1. This is the lowest team score in Test cricket to have included a century.[1]Mohsin was one of a minority of South Asian players to come to terms with conditions in Australia and England, scoring two consecutive centuries in Australia in 1983/4[2] and becoming the first Pakistani batsman to score a Test double century at Lord’s, which he did earlier in 1982.[3] He retired from international cricket to pursue a film career.
Mohsin later married Bollywood movie star Reena Roy and had a short career as an actor in the Indian film industry. He has since divorced Roy and remarried and lives in Karachi, Pakistan. He has a daughter with Reena Roy, who now lives with her mother in India. He had named his daughter Jannat, but she is now called Sanam. On 2 March 2010 Mohsin Khan was named Iqbal Qasim‘s successor as chief selector of the Pakistan national cricket team. He accepted the role turned down by fellow one-time opener Saeed Anwar. Mohsin is Pakistan’s fourth chief of selectors in the 12 months of 2009–10.[4]

Filmography

  • 1997 Mahaanta
  • 1996 Ghunghat
  • 1994 Beta
  • 1994 Madam X
  • 1993 The Elephant Walk
  • 1993 Jannat
  • 1992 Laat Saab
  • 1991 Saathi
  • 1991 Pratikar
  • 1991 Gunehgar Kaun
  • 1991 Fateh
  • 1989 Batwara
  • 1992 tyagi
Enhanced by Zemanta